انسانی حقوق کے سالانہ بین الاقوامی فلمی میلہ

کینیڈا  /  پاکستان: حسیب  خواجہ کی زندگی پے بطورِصحافی و رہنماانسانی حقوق، کوہستان ویڈیو کیس کے حوالے سے،   کینیڈین فلم سازوں کی بنائے گئی ڈاکومنٹری فلم

  Unveiled: The Kohistan Video Scandal

کو ٹورنٹو (کینیڈا) میں دس دسمبر(پاکستان کے وقت کے مطابق، گیارہ دسمبریعنی آج صبح سات بجے) کو JAYU کے پانچویں، انسانی حقوق کے سالانہ بین الاقوامی فلمی میلہ، میں عالمی نمائش کے لئے پہلی دفعہ انسانی حقوق کے عالمی دن پے پیش کر دیا گیا۔اس ڈاکو منیٹری فلم میں بتایا گیا ہے کہ کس طرح کوھستان میں جرگہ کے زریعے  سے پانچ  لڑکیوں کو قتل کیا جاتا ہے۔ اور حسیب خواجہ تحقیقات کرکے کیس کو دوبارہ زندہ کرتا ہے اور کئی سالوں سے بے گناہ قتل کیجانے والی لڑکیوں کو انصاف دلانے کے لئے بے لوث کوشش کررہا ہے،اور متا ثرہ افضل کوہستانی کی کس طرح مدد کر رہا ہے۔فلم کے اختتام پر سامعین کے ساتھ  سوالات و جوابات کا سیشن حسیب خواجہ نے بذریعہ سکاہپ، فلم کی ڈ ائریکٹربرشکے(Brishkay) اور فلم کی پروڈیوسر الیئیزبیتھ(Elizabeth)کے ساتھ کیا، جس میں فلم کی تفصیلات کے ساتھ ساتھ حسیب خواجہ نے کوہستان ویڈیو کیس کی موجودہ صورتِ حال، پاکستان میں خواتین کے مسائل، مذہب اور سماج کی کی غلط توہمات، سیاستدانوں و پارلیمنٹرین کے عورتوں کے حوالے سے تعصب آمیز رویے پے روشنی دالی اور ممکناتجاویز بھی دیں۔  JAYUکے پانچویں، انسانی حقوق کے سالانہ بین الاقوامی فلمی میلہ میں یہ واحد فلم تھی جس کو پوری دنیا سے عالمی نماہش کے لئے پیش کیا گیا۔ اس کے علاوہ اسی فلم کو نارتھ امریکہ کے سب سے بڑے فلمی فورم Hot Docs Canadian International Documentary Festivalنے بھی اسی میلے میں Co Present کیا۔سامعین کی طرف سے جب پاکستانیوں کی اکژریت کے منفی کردار پر سوالات اٹھائے گئے تو فلم کی ڈ ائریکٹربرشکے(Brishkay)  نے کہا کہ نہیں پاکستان میں صرف دہشت گرد ہی نہیں حسیب خواجہ جیسے پرامن،آزاد خیال اور انسان دوست نطریات کے حامل لوگ بھی موجود ہیں جو ملک کو پرامن بنانے اور خواتین کو برابری  کے حقوق دلانے کے لئے کے لئے اپنی جانوں کی پرواہ کئے بنا بے لوص خدمات سرانجام دے رہیہیں۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ میں نے پاکستان پے کافی عرصہ تحقیق کرنے کے بعدحسیب خواجہ ڈاکومنٹٹری کے لئے منتخب کیا۔اسی انسانی حقوق کے سالانہ بین الاقوامی فلمی میلہکو کینیڈاکے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈیو(Justin Trudeau) نے بھی انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والوں کو اپنی نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے داد دی اورسب کو مبارکباد دی۔مزیدپاکستان میں کینیڈا کے سفارتخانے کے سفیر Perry J. Calderwoodنے حسیب خواجہ کو اُن کی  انسانی حقوق کے حوالے سے خدمات کو سرہاتے ہوئے نہ صرف سرٹیفکیت دیا بلکہ سفارتخانے کے آفشیل سوشل میڈیا اکاونٹس پراسی حوالے سے مبارکباد دیتے ہوئے فلم کو پروموٹ بھی کیا۔  انسانی حقوق کے سالانہ بین الاقوامی فلمی میلہ میں پوری دنیا سے تین ہزار سے زاہد مختلف طبقا ہائے فکر کے لوگوں نے شرکت کی۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*