خواتین کے بارے میں نازیبا بیان پر ڈونلڈ ٹرمپ نے معافی مانگ لی

نیویارک: 

 

سینئر رپبلکن رہنماؤں نے خواتین کے بارے میں صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کے نازیبا بیان کی مذمت کی ہے، ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک وڈیو میں اپنے بیان پر ندامت کا اظہار کرتے ہوئے معافی مانگی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا یہ بیان 2005 کا ہے جس کی وڈیو امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے حال ہی میں جاری کی ہے، اس وڈیو ٹیپ میں ڈونلڈ ٹرمپ ٹی وی کے میزبان بلی بش کو یہ کہتے ہوئے سنے جا سکتے ہیں کہ ’’اگر آپ اسٹار ہیں تو خواتین کے ساتھ کچھ بھی کر سکتے ہیں‘‘۔ اس وڈیو پر شدید تنقید کے بعد ٹرمپ نے ایک وڈیو نشر کر کے اپنے بیان پر معافی طلب کی ہے۔

وڈیو میں انھوں نے کہا کہ ’’میں نے ایسی باتیں کہیں اور کی ہیں جن پر مجھے افسوس ہے جو کوئی مجھے جانتا ہے اسے معلوم ہے کہ یہ الفاظ میری شخصیت کی عکاسی نہیں کرتے، میں نے یہ باتیں کہی ہیں، میں غلط تھا اور میں معافی مانگتا ہوں‘‘۔ انھوں نے مزید کہا کہ ’’میں نے کبھی نہیں کہا کہ میں بے عیب ہوں، نہ ہی میں نے کوئی ایسا شخص بننے کی کوشش کی جو میں نہیں ہوں، میں آنے والے کل میں بہتر انسان بننے کا وعدہ کرتا ہوں‘‘۔

ٹرمپ کی حریف ہلیری کلنٹن نے ٹویٹر پر تبصرہ کرتے ہوئے ان باتوں کو ’’ہولناک‘‘ قرار دیا، انھوں نے لکھا کہ ’’ہم اس شخص کو صدر نہیں بننے دے سکتے‘‘۔ اس وڈیو میں ارب پتی تاجر ڈونلڈ ٹرمپ کو ایک شادی شدہ خاتون کے ساتھ سیکس کی کوشش اور دیگر خواتین کے ساتھ بوس و کنار، چھونے اور پکڑنے کے بارے میں ڈینگیں مارتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔

ٹرمپ نے اسے پرانی اور ’’لاکر روم کی باتیں‘‘ کہتے ہوئے مسترد کر دیا ہے، البتہ اس کے ساتھ انھوں نے یہ بھی کہا ہے کہ ’’سابق صدر بل کلنٹن نے تو انھیں اس سے زیادہ خراب باتیں کہہ رکھی ہیں‘‘ جب یہ وڈیو منظر عام پر آئی تو ری پبلکن پارٹی کے سینئر رہنماؤں نے ٹرمپ کو اس پر تنقید کا نشانہ بنایا، اسپیکر پال رائن نے رواں ہفتے شمالی ریاست وسکانسن میں ہونے والی تقریب ری پبلکن فال فیسٹ کے دعوت نامے سے ڈونلڈ ٹرمپ کا نام کاٹ دیا ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*